پردے کے پیچھے

آپ دنیا جہاں کا علم رٹ  کرعالم بن سکتے ہے، مذہبی کتابیں، ارشادات، اور روایات حفظ کر کے واعظ، مفتی، اور پنڈت بن جاتے ہیں، مگر اپنی ذات اور مں ایک بد بو دار ،اور اندھیرا کنواں ہوتا ہے، علم حاصل کرنا ایک الگ چیز ہے اور علم کو اپنی ذات کا منبہ، روشنی کا مینار بنانا الگ ہے۔۔ یہ لوگ کمپوٹر کی طرح دنیا جہاں کی معلومات حاصل کرتے ہیں۔ لیکن اس علم کے حسین اور خوبصورت پردے کے پیچھے بد صورت، بے خبر، اور لا علم انسان نما حیوان موجود ہوتا ہے،  

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s